Welcome to JCILM GLOBAL

Helpline # +91 6380 350 221 (Give A Missed Call)

یسوع ہماری امید، احسان، رزق اور نجات ہے..! ایک نیا ذہن ہمیں مسیح یسوع میں اپنی اصل شناخت کو پہچاننے میں مدد کرتا ہے اور یہ کہ اب ہم گناہ کی طاقت کے غلام نہیں ہیں۔۔اپنے ذہن کی تجدید زیادہ صحت مند، خوشگوار اور پرامن زندگی گزارنے کا ایک بہترین طریقہ ہے۔۔اپنے ذہن کی تجدید، آپ کے سوچنے کے انداز کو تبدیل کرنا اپنے لئے ایک بہتر زندگی اور خدا کی عزت کرنے والی زندگی پیدا کرتا ہے۔.اپنے ذہن کی تجدید کے پانچ مراحل ١۔خداوند سے کہیں کہ وہ آپ کی حفاظت کرنے اور اپنے ذہن کی ہدایت کرنے میں مدد کرے۔2.خود مرکوز اور خود کو شکست دینے والے خیالات کے ماخذ کو پہچانیں۔3.خدا کے کلام کے ذریعے خود مرکوز سوچ کو خدا پر مرکوز ذہنیت سے بدل دیں۔4.اس سچائی میں آرام کرو کہ یسوع مسیح میں تم قبول کیے گئے ہو۔5.روزانہ 1-4 مراحل دہرائیں۔ خدا آپ کی مذمت نہیں کرتا، تو جان لیں کہ خود مذمت کے خیالات خدا کی طرف سے نہیں ہیں۔خدا کی محبت میں کوئی خوف نہیں ہے، لہذا جب آپ خوف یا شکست محسوس کرتے ہیں، تو آپ ان خیالات کو بھی بحفاظت نظر انداز کرسکتے ہیں۔۔خدا چاہتا ہے کہ تم اس کے بیٹے یسوع کی طرح تبدیل ہو جاؤ جو باپ کی مرضی پر مکمل طور پر مرکوز تھا۔.
رومیوں8:5-6
5 کیوں کہ جو لوگ گناہ کی فطرت کے خوا ہش کے مطا بق چلتے ہیں وہ صرف ان چیزوں کے بارے میں سوچتے ہیں جو ان کے گناہ کی فطرت چاہتی ہے۔لیکن جوروحانی خیالات کے مطا بق چلتے ہیں انکے خیالات گناہ کے مطابق ہو تے ہیں لیکن جو روحانی خیالات کے مطا بق زندہ ہیں انکے خیالات روح کے خیالات کی طرح رہتے ہیں۔ 6 جو خیالات ہماری انسانی فطرت کے تابع ہیں اس کا نتیجہ موت ہے۔ اور جو روح کے تابع ہیں اس کا نتیجہ زندگی اور سلامتی ہے۔

Archives

May 22

Remember this: Whoever turns a sinner from the error of his way will save him from death and cover over a multitude of sins. – James 5:20. When someone wanders

Continue Reading »

May 21

God made him who had no sin to be sin for us, so that in him we might become the righteousness of God. —2 Corinthians 5:21. Jesus was perfect, spotless,

Continue Reading »

May 20

Jesus did not let [the man from whom he had cast out a legion of demons] come with him, but said, “Go home to your family and tell them how

Continue Reading »